پُوچھ لو پُھول سے کیا کرتی ہے

اداس ہونے کے دن نہیںابھی تک کوئی تبصرہ نہیں ہوا »

پُوچھ لو پُھول سے کیا کرتی ہے

کبھی خوشبو بھی وفا کرتی ہے

خیمئہ دل کے معتدّرکا یہاں

فیصلہ تیز ہَوا کرتی ہے

بے رُخی تیری،عنایت تیری

زخم دیتی ہے، دَوا کرتی ہے

تیری آہٹ مِری تنہائی کا

راستہ روک لیا کرتی ہے

روشنی تیرا حوالہ ٹھہرے

میری ہر سانس دُعا کرتی ہے

میری تنہائی سے خاموشی تری

شعر کہتی ہے، سُنا کرتی ہے

اس تحریر پر اپنی رائے دیجیے

درج ذیل خانوں میں آپ اردو لکھ سکتے ہیں ۔ انگریزی لکھنے کے لیے Control اور Space کے بٹن ایک ساتھ دبائیے